Calcium in vegetables

کیلشیم اور سبزیاں

جسمانی ضروریات کے لیے کیلشیم غذائی اشیا میں اتنی فراوانی سے موجود ہوتا ہے کہ ہر طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد اس کو حاصل کر سکتے ہیں ۔ کیلشیم کے ذرائع میں درج ذیل اشیا شامل ہیں۔

پتوں والی سبزیاں، دودھ،  پنیر، مچھلی، انڈا، گوشت اور دالیں۔ کیلشیم سب سے زیادہ دودھ اور اس سے بنی ہوئی اشیاء مثلا پنیر میں شامل ہوتا ہے۔ پنیر میں کیلشیم کی مقدار نو سو ملی گرام فی سو گرام ہے۔ اس کے بعد سبزیوں کا نمبر آتا ہے۔ دودھ کے بعد سب سے زیادہ کیلشیم ہرے پتوں والی سبزیوں میں پایا جاتا ہے۔ کیلشیم کی روزانہ مطلوبہ مقدار عام طور پر کیلشیم کی کم سے کم مقدار جو شیر خوار بچوں میں ضروری سمجھتی جاتی ہے وہ ۵۰۰ ملی گرام روزانہ ہے۔ نوجوانی تک 1500 ملی گرام کیلشیم روزانہ درکار ہوتا ہے ۔ مردوں میں کیلشیم کی روزانہ مقدار مستقل رہتی ہے جبکہ خواتین میں مخصوص صورت حال میں کیلشیم کی مختلف ضرورت دیکھنے میں آئی ہے۔

کیلشیم کی ضرورت

بچوں میں چونکہ جوانی کی عمر تک جسمانی ساخت میں تبدیلیاں رونما ہوتی ہیں لہذا بچپن سے جوانی تک بڑھتی ہوئی عمر کے ساتھ ساتھ کیلشیم کی اضافی مقدار جسم کو روزانہ درکار ہوتی ہیں۔

ایسی خواتین جو حاملہ ہوتی ہیں یا وہ خواتین جو اپنے بچوں کو دودھ پلاتی ہیں ، اس پیریڈ میں کیلشیم کی اضافی ضرورت جسم کو ہوتی ہے۔ ایسی خواتین جن کی عمر 45 سال کو پہنچ جاتی ہیں ان کے ایام بند ہونے کے قریب ہوتے ہیں، اس پیریڈ میں بھی جسم کو کیلشیم کی اضافی ضرورت ہوتی ہے۔ ان تینوں حالتوں میں جبکہ جسم کی کیلشیم کی ڈیمانڈ بڑھی ہوئی ہوتی ہے کیلشیم پر اگر خصوصی توجہ دی جائے تو بہت سے مسائل سے بچا جا سکتا ہے۔

کیلشیم کے اعراض

ہڈیوں اور دانتوں کی نشونما اور مضبوطی۔

دل، پٹھوں اور اعصاب کے افعال۔

خون کا جمنا۔

پٹھوں کا سکڑنا۔

شریانوں کی شکل برقرار رکھنے میں کیلشیم کی ضرورت ہوتی ہے۔

نارمل کیلشیم لینے سے جسم، ہڈیوں اور دانتوں کی نشونما صحت مند طریقے سے ہوتی ہے۔

کیلشیم کی کمی کے نقصانات

بچوں میں نوجوانی کی عمر تک کیلشیم کی کمی کی وجہ سے رگٹس نامی بیماری ہو جاتی ہے جس کی انتہائی صورت اوسٹیوینیا کیلشیم کی کمی کی وجہ سے سامنے آتی ہیں جس میں ہڈیاں نہ صرف کمزور ہو جاتی ہیں بلکہ ان میں ٹوٹ پھوٹ کا عمل شروع ہو جاتا ہے۔

کیلشیم کے حصول کے ذرائع

کیلشیم کے حصول کے لیے فطرت میں پائے جانے والے کیلشیم کے ذرائع (خصوصاً سبزیوں) کو بروئے کار لائیں۔ ان سے اتنی مقدار میں کیلشیم مل سکتی ہے کہ آپ اپنی غذا کی کیلشیم کی ڈیمانڈ آسانی سے پورا کر سکتے ہیں لیکن اگر آپ ایسا نہیں کر سکتے تو دواؤں سے کیلشیم حاصل کرنے میں کوئی قباحت نہیں ہے کیونکہ کیلشیم ابتدائی عمر سے آخری عمر تک انتہائی ضروری ہے۔

One thought on “کیلشیم اور سبزیاں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *