Bhuny Huay Chany Ke Faiday Benefits Of Black Chickpeas

Bhuny Huay Chany Ke Faiday Benefits Of Black Chickpeas

چنوں کے فوائد : بھنے ہوئے چنوں کے فائدے

ہمارے ہاں عموماً دو طرح کے چنے پائے جاتے ہیں ایک کالے چنے اور دوسرا سفید چنے۔ چنوں کی دونوں قسموں میں ہی وٹامنز اور منرلز کی وافر مقدار پائی جاتی ہے۔ لیکن اگر طبی لحاظ سے دیکھا جائے تو کالے چنے سفید چنوں کے مقابلے میں زیادہ فائدہ مند ہیں۔ کالے چنوں کو مختلف طریقوں سے استعمال کیا جاتا ہے اس کا شوربا بہت مزے کا بنتا ہے، کالے چنے کا پلاؤ بہت لذیذ ہوتا ہے اور اس کے علاوہ چاولوں کی غذائی کمی بھی دور کر دیتا ہے۔ چنے کا حلوہ بھی بنایا جاتا ہے۔ جسمانی کمزوری اور مردوں کی خاص کمزوری کے لیے سات عدد کالے چنے رات کو دودھ میں بھگو دیں صبح اٹھ کر نہار منہ چنے چبا کر کھا لیں اور دودھ بھی پی لیں۔ چنوں کی تعداد آپ سات عدد سے بڑھا کر پندرہ سے بیس عدد بھی کر سکتے ہیں۔ دودھ آپ نے اس میں ایک پاؤ کے قریب ڈالنا ہے یہ مرد اور عورتوں دونوں کے لئے بہت زیادہ مفید ہے۔ ایسی خواتین جو جسمانی کمزوری کا شکار ہیں وہ استعمال کریں۔ اس کے علاوہ ایسے حضرات جو صبح واک کرتے ہیں اور سخت محنت کرتے ہیں۔ وہ  واک کے بعد چنوں کا استعمال کر سکتے ہیں۔

بھنے ہوئے چنے

بھنے ہوئے چنے بے حد مقوی ہیں۔ اس میں فائبر اور پروٹین کی وافر مقدار پائی جاتی ہے۔ نظام ہضم کے لیے مفید ہے۔ آنتوں کے جراثیم کو ختم کرتا ہے۔ ایک طرح کا اینٹی بائیوٹک بھی ہے۔ چنے گوشت اور انڈے کا نعم البدل ہے۔  شوگر کے مریضوں کے لیے انتہائی فائدہ مند ہے۔ بھنے ہوئے چنے کھانے سے آپ کی شوگر ایک دم سے نیچے یا ایک دم سے اوپر نہیں جائے گی۔ چنوں میں کیونکہ فائبر کی وافر مقدار پائی جاتی ہے۔ اسی لیے وزن کم کرنے کے لئے آپ لوگ چنوں کا استعمال کر سکتے ہیں۔ ایک مٹھی کے برابر چنے یا تقریباً پچاس گرام چنے آپ روزانہ استعمال کر سکتے ہیں۔ چنے کھانے کے بعد آپ نے ایک گھنٹے تک پانی کا استعمال نہیں کرنا ہے۔ اور چنوں کو آپ نے ان کے چھلکوں کے سمیت کھانا ہے۔ یہ عمل آپ نے مسلسل دو ماہ تک کرنا ہے۔ انشاء اللہ اس عمل سے ایک تو آپ کو قبض نہیں ہوگی۔ اور دوسرا آپ کا وزن آٹھ سے دس پاؤنڈ تک کم ہو جائے گا۔ چنے خون کی نالیوں کو طاقت فراہم کرتے ہیں کولیسٹرول لیول کو کم کرتے ہیں۔ دل کو طاقت ملتی ہے۔ اس کے علاوہ ھڈیوں اور کینسر کے خلاف قوت مدافعت پیدا کرتے ہیں۔ چنے بہترین اینٹی آکسیڈنٹ ہیں۔ چنوں کی اہمیت کا اندازہ آپ اس بات سے لگا سکتے ہیں کہ مغل شہنشاہ جب گرفتار ہوئے تو ان سے کہا گیا کہ آپ کھانے کے لیے کسی ایک اناج کا انتخاب کرلیں، پھر آپ کو روزانہ وہی اناج کھانا پڑے گا۔ تو مغل شہنشاہ نے چنے کو منتخب کیا۔ چنا بادشاہوں کی غذا ہے۔ چنے پھیپھڑوں کو بھی طاقت دیتے ہیں۔ جلدی امراض میں خون کی صفائی کا کام کرتے ہیں۔

اگر آپ کے بال بہت زیادہ گرتے ہیں، بال کمزور ہے، بالوں کو لمبا اور مضبوط کرنا چاہتے ہیں۔ تو میں آپ کو ایک نسخہ بتاتا ہوں اس کو استعمال کریں انشااللہ آپ کے بال گھنے سیاہ چمکدار اور ٹوٹے گی نہیں، اور آپ کے بال گریں گے نہیں۔ اس میں آپ کو تین چیزیں چاہئے سب سے پہلے نمبر پر بیسن دوسرے نمبر پر ایلوویرا جیل اور تیسرے نمبر پر لیموں۔ تینوں کو آپ نے برابر مقدار میں لے کر پیسٹ بنا لینا ہے۔ اچھی طرح مکس کر لینا ہے اور پھر اس کو بالوں میں لگانا ہے۔ بالوں میں ایک گھنٹے تک یہ پیسٹ لگا رہے۔ اور پھر اس کو پانی سے دھو لیں۔ دھونے کے لیے آپ نے شیمپو کا استعمال نہیں کرنا ہے۔ اگر آپ کے بال خشک ہے تو پھر آپ لیموں کی جگہ دہی کا استعمال کریں۔

اس کے علاوہ میں آپ کو ایک اور نسخہ بتاتا ہوں نزلہ زکام چھینکوں کا آنا، حلق میں بلغم کا گرنا، نظر کی کمزوری، دماغی کمزوری کے لئے بہت ہی مجرب نسخہ ہے آپ اس کو نوٹ کریں اور ضرور استعمال کریں۔ اس کے لیے پہلے نمبر پر آپ نے آدھا کلو بھنے ہوئے چنے لینے ہیں۔ دوسرے نمبر پر آپ نے آدھا کلو سونف لینی ہے۔ اور تیسرے نمبر پر چار مغز ایک سو پچیس گرام لینی ہیں۔ اور چوتھے نمبر پر آپ نے ایک پاؤ مغز بادام لینے ہیں یعنی بادام کی گری آپ نے دو سو پچاس گرام لینی ہے۔ مصری آپ نے آدھا پاؤ لینی ہے۔ لیکن یہ خیال رہے کہ جو شوگر کے مریض ہے وہ مصری کا استعمال نہ کریں۔ یہ تمام چیزیں لینے کے بعد ان کو پیس کر سفوف بنا لیں۔ اور کسی ڈبے میں محفوظ کرلیں۔ صبح ناشتے سے تیس منٹ پہلے ایک چمچ چھوٹا چائے والا گاجر کے جوس کے ساتھ استعمال کریں۔ اور اسی طرح رات کو کھانے کے ایک گھنٹے کے بعد آپ استعمال کریں۔ اگر گاجر کا جوس موجود نہ ہو تو آپ پانی کا استعمال بھی کر سکتے ہیں۔ اس نسخہ کو آپ نے مسلسل تین ماہ تک استعمال کرنا ہے۔ چھوٹے بچوں کو اس کی استعمال آدھا چمچ چائے والا دیں۔ دماغی کمزوری اور نظر کی کمزوری کے لئے یاداشت کو بہتر بنانے کے لیے یہ ایک لاجواب نسخہ ہے۔

ایسے لوگ جنہوں نے چنوں کو حفظ ماتقدم کے طور پر استعمال کرنا ہے۔ وہ چنے اس وقت کھائیں جب انہیں بھوک لگی ہو۔ چنوں کی مقدار میں آپ کو بتا دیتا ہوں کہ روزانہ ایک مٹھی سے لے کر دو مٹھی تک یعنی پچاس گرام تک آپ چنے کھا سکتے ہیں۔ ایک بات ہمیشہ یاد رکھیں کہ چنے کھانے کے بعد آپ نے ایک گھنٹہ تک پانی کا استعمال نہیں کرنا پانی آپ نہیں پینا۔ اور چنوں کو آپ نے چھلکوں سمیت استعمال کرنا۔ چھلکے اتارنے نہیں ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *